ONLINE ORDER
Muhammad Nadeem Bhabha
Search Haal | حال
Ghazlen - غزلیں

اونچی زبان میں ہے کیا اونچی پکار اور بس

اونچی زبان میں ہے کیا ، اونچی پکار اور بس
یار کے ذکر کو ندیم ؔدل میں اُتار اور بس
تجھ کو کسی سے کیا غرض تیرا جہاں تُو خود ہی ہے
اپنی نگاہِ شوق سے خود کو سنوار اوربس
اور نہیں کوئی طلب کافی ہے گر مجھے ملے
ایک جہان عشق کا ایک خمار اور بس
آلِ رسولﷺ کے طفیل مولیٰ علی کے ہاتھ پر
بیعتِ عشق ہو گئی اے مرے یار اوربس
عشقِ محمدﷺ و علی دان سخی نے کردیا
یعنی خوشی سے بھر دیا دل کا دیا ر اور بس